● کرکٹ ورلڈ گپ شپ

● کرکٹ ورلڈ گپ شپ

۔۔۔
کرکٹ 2019 کا ورلڈ کپ جیتنے کے بعد کرکٹ کی نرسری انگلستان میں ایک جشن کا سماں ہے۔ انگلش یوتھیئے اور یوتھنیئائیں سڑکوں پر امڈ آئے ہیں۔ کہیں آتش بازی تو کہیں قحبہ خانہ میں جمی تاش کی بازی۔ لنڈھائے گئے جام کے تام جھام اپنی جگہ اور انگریز دوشیزاوں کے ہوش ربا جلوے اپنی جگہ۔ کیا گورے، کیا کالے اور کیا مذید کالے، ہر کوئی مست گھوم رہا ہے۔ چرچل کا انگلستا اب ہوا پرانا۔ نیا انگلستان بس اب بننے کو ہے!

اس موقع کو غنیمت جانتے ہوئے ڈی جی ایم آئی 6 نے اپنے ٹوئیٹر پیغام میں انگریز قوم کو مبارکباد پیش کی ہے۔ انکا کہنا تھا کہ ___
“مستقبل کے وزیر اعظم نے اپنی حکمت عملی سے دشمن کیوی کی کمر توڑ دی ہے۔ اب کیوی ٹیم کے شکست خوردہ عناصر کو اپنے ملک میں بھی جائے پناہ نہیں ملیگی۔”

اس موقع خاص پر برٹش آرمی کے سربراہ نے فارمیشن میٹنگ کے بعد ایک سیمینار سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ورلڈ کپ کے بعد انگلینڈ کی معیشت میں بہتری دیکھنے میں آرہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ لندن میں دہشت گردی ختم کردی گئی ہے۔ انگلش ٹیم کیطرف میلی نظر سے دیکھنے والے کیویوں کی آنکھیں نکال دی جائینگی۔ نیوزی لینڈ والوں کو سرحد کے پار کامیابی سے دھکیل دیا گیا ہے۔ اب انگلش ٹیم کے کھلاڑیوں کا مستقبل محفوظ ہاتھوں میں ہیں۔

ہوم سیکریٹری (وزیر داخلہ) جناب ساجد جاوید نے مخالف ٹیم کے تمام کرکٹنگ عناصر بالخصوص فاسٹ بالرز کو خبردار کیا ہے کہ وہ اپنی شرپسندی والی سوئنگ بالنگ سے باز آجائیں ورنہ ان سے آہنی گیندوں سے نمٹا جائیگا۔

انگلش کپتان مورگن نے اپنی انتخابی مہم کے دوران کہا کہ وہ لوٹی گئی دولت مشترکہ واپس لائینگے۔ وزیر اعظم بننے کے بعد وہ کرپٹ لوگوں کو الٹا لٹکائینگے۔ انکا کہنا تھا کہ وہ این آر او نہیں دینگے، سکاٹ لیند یارڈ کو خودمختار ادارہ بنائینگے۔ انہوں نے معنی خیز انداز میں کہا کہ نیوزی لینڈ کا چیپٹر کلوز ہوگیا ہے۔ اب لندن سے خوف کی فضا ختم ہوچکی ہے۔ انکا کہنا تھا کہ اقتدار میں آکر 10 ڈاوننگ اسٹریٹ کو لائبریری میں تبدیل کردینگے۔

کپتان مورگن کے دست راست، اور کمسن جوفرا آرچر نے انتخابی اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ___
“حکومت میں آنے کے بعد کرپٹ ایسٹ انڈیا کمپنی سے ہندوستان سے لوٹی گئی 200 ارب پاونڈ برآمد کی جائیگی۔ جسمیں سے 100 ارب پاونڈ انکا کپتان مورگن، اگلے دن مودی کے منھ پر مارے گا اور بقیہ 100 ارب پاونڈ ملکہ کی تاج پوشی پر خرچ کیا جائیگا۔”

خوشی کے اس موقع پر انگلستان کے سب سے بڑے نیوز چینل بی بی سی پر، جسے اے آر وائی نے خرید لیا ہے، ایک اینکر اپنی کانسپریسی تھیوری کے فیل ہونے پر بادامی چھوہارے کھاتے دیکھا گیا۔ اے آر وائی کے صحافی شفیع نقی کا کہنا تھا کہ اب ہمارا کپتان مورگن انگلینڈ کو ترقی کی سمت گامزن کردیگا۔ اب نیوزی لینڈ کو پتہ چل جانا چاہیئے کہ برٹش آرمی اپنے پیروں پر کھڑی ہوگئی ہے۔ اب دشمن انکا بال بیکا نہیں کرسکتا۔

ڈیفنس انالسٹ پینی مورڈاونٹ کا خیال ہے کہ اب پاونڈ سٹرلنگ کو دہشت گردی کا شکار نہیں ہونے دینگے۔ ہمارا ڈیفینس اب مظبوط ہاتھوں میں ہے۔ آئرلینڈ میں جلد ہی ڈی ایچ اے ہاوسنگ اسکیم شروع کی جائیگی۔ جس کے لیئے 92 والے کپتان وزیراعظم سے تعاون کی درخواست کی گئی ہے۔

آخر میں برٹش آرمی، ایم آئی سکس، سکاٹ لینڈ یارڈ اور آے آر وائی کے نمائندوں پر مشتمل وفد نے کپتان مورگن سے ڈبلن میں انکی رہائش گاہ پر ملاقات کی اور انہیں اپنی نیک خواہشات اور ممکنہ تعاون کا یقین دلایا۔

کپتان نے شکریہ ادا کرتے ہوئے کہا کہ وہ لوٹا ہوا مال واپس لائینگے، چاہے انہیں ہائیڈ پارک میں دھرنا ہی کیوں نا دینا پڑے!

○ جاوید اختر

Published by

akhterjawaid

Freelancer and blogger

Leave a Reply

Please log in using one of these methods to post your comment:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out /  Change )

Google photo

You are commenting using your Google account. Log Out /  Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out /  Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out /  Change )

Connecting to %s